وکیل پرتشدد،گھرمسمار کرنے کیخلاف آزادکشمیر بھر میں وکلاء کااحتجاج

SHARE

وکیل پرتشدد،گھرمسمار کرنے کیخلاف آزادکشمیر بھر میں وکلاء کااحتجاج

مظفرآباد(بیورورپورٹ)تبسم صادق ایڈووکیٹ ممبر بار کونسل ڈسٹرکٹ میرپور پر پولیس تشدد اور ان کے گھر مسمار کرنے کے خلاف آزاد جموں وکشمیر بار کونسل کی کال پر ریاستی وکلاء سراپا احتجاج ۔عدالتوں کا مکمل بائیکاٹ۔تفصیلات کے مطابق تبسم صادق ایڈووکیٹ ممبر بار کونسل پر پولیس تشدد اور ان کے گھر کو غیر قانونی طور پر مسماد کرنے کے خلاف آزاد جموں وکشمیر بار کونسل کی کال پر ریاستی وکلاء نے گزشتہ روز شدید احتجاج کیا اور عدالتوں کا مکمل بائیکاٹ کیا ۔جلسے ،جلوس اور ریلیاں منعقد کرتے ہوئے تبسم صادق ایڈووکیٹ ممبر بار کونسل پر پولیس تشدد کھلی دہشتگردی قرار دیا ۔وائس چےئرمین بار کونسل شوکت علی کیانی نے مطالبہ کیا کہ تبسم صادق ایڈووکیٹ پر تشدد کرنے والے انتظامی آفیسران و پولیس اہلکاران کے خلاف فوری کارروائی کرتے ہوئے انہیں معطل کر کے تحت قانون انضباطی کارروائی عمل میں لائی جائے ۔لاقانونیت اور انارکی کی صورت حال کو فوری طور پر ختم کیا جائے ۔اس واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں ۔ایک سوچی سمجھی سازش اور منصوبے کے تحت آزادکشمیر کے اندر افراتفری پیدا کی جا رہی ہے ۔اس واقعہ میں ملوث پولیس اہلکاران کے خلاف ایف آئی آر درج کی جائے اور انہیں قرار واقعی سزا دی جائے ۔وائس چےئرمین نے کہا کہ وکلاء کی ریاست کے اندر آئین قانون کی بالادستی اور عوام کو فوری اور سستے انصاف کی فراہمی کیلئے جدوجہد کرنا بنیادی ذمہ داری ہے ۔وکلاء عام آدمی کو انصاف دلانے کیلئے کوشاں ہیں اور ان کوششوں میں رکاؤٹ ڈالنے کی کسی صوت اجازت نہیں دی جائے گیْ ۔انہوں نے انتظامیہ اور انسپکٹر جنرل پولیس سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ میرپور کی پرامن فضاء کو خراب کرنے اور دہشتگردی کے مرتکب اہلکاران کو فوری طور پر ان کے عہدوں سے برطرف کیا جائے اور ان کو قرار واقعی سزا دی جائے بصورت دیگر پورے آزادکشمیر میں لامتناعی احتجاج کیلئے وکلاء راست اقدام کیلئے مجبور ہونگے اور اس کی ساری ذمہ داری انتظامیہ پر عائد ہوگی ۔

TAGS:

TheMeanBlog

Pakistani News

Urdu News

Latest News

Leave a Reply